Love Story From Heaven (Urdu)

Love Story From Heaven (Urdu)

آسمان سے مُحبت بھری داستان

 

از مائیک ہارڈنگ

کاپی رائٹ ۲۰۱۳

تمام جملہ حقُوق محفُوظ ہیں۔

پاسٹر مائیک ہارڈنگ

مُحبت کی خُوشخبری کی کلیسیا

پوسٹ بکس نمبر ۴۴۸۲

اپاچے جنکشن، اری زونا ۸۵۱۷۸

۴۸۰۔۵۱۰۔۷۰۸۹

mikecrisharding@aol.com

www.lovegospelchurch.com

پاسٹر مائیک کی تعلیمات کی ویڈیوز اور آڈیوز کیلئے وزٹ کریں

 

 

آسمان پر ایک خُدا ہے جو آپ سے مُحبت رکھتا ہے۔ وہ آپ کو آج  دعوت دے رہا ہے کہ اُس کے بیٹے یا بیٹیاں بن جائیں۔ اگر آپ اپنے دل کو آج اُس کیلئے کھولیں گے، تو آپ کی زندگی ہمیشہ کیلئے بدل جائے گی۔ آپ آج ہمیشہ کی زندگی کیساتھ خُدا کے فرزند بن سکتے ہیں۔آج آپ خُدا کے پیارے شہزادے یا شہزادی بن سکتے ہیں۔ آج، خُدا آپ کے دل میں آ سکتا ہے اور رہ سکتا ہے اور آپ کو اپنی مُحبت، سلامتی اور شادمانی دے سکتا ہے۔

 

بائبل، کبھی بھی بتائی گئی سب سے عظیم مُحبت بھری داستان ہے۔ یہ خُدا کی آسمان سے مُحبت بھری داستان ہے۔

 

بائبل کہتی ہے کہ ابتدا میں ، خُدا نے آسمان اور زمین تخلیق کئے۔ہمارا خُدا سچا اور واحد خُدا ہے۔ اُس نے کائنات کو تخلیق کیا۔۔۔سُورج، چاند اور ستاروں کو۔ اُس نے زمین کو تخلیق کیا  اور اُس میں موجُود تمام جانداروں کو بھی۔ اور آخر کار، جب وہ اِس زمین کو بنا چُکا کہ وہ ہمارا گھر ہو، اُس نے ہمیں اپنی شبیہ پر تخلیق کیا۔ خُدا نے آپ کو اپنی شبیہ پر بنایا۔ آپ حیرت انگیز اور اہم ہو!

خُدا آپ سے چاہتا ہے کہ جان لیں  کہ وہ کون ہے۔ وہ اپنے آپ کو بائبل میں ہم پر ظاہر کرتا ہے۔ خُدا ہم سے چاہتا ہے کہ جان لیں کہ وہ اچھا ہے، کہ وہ پاک ہے اور کہ وہ آپ  سے مُحبت رکھتا ہے۔خُدا میں کوئی بُرائی نہیں ہے۔ وہ ہر طور پر اچھا ہے۔ وہ سچائی اور بھلائی اور انصاف کا خُدا ہے۔سب سے اہم، وہ مُحبت والا خُدا ہے۔

 

جب خُدا نے پہلے بنی نوع انسان کو تخلیق کیا ، اُس نے اُنہیں آدم اور حوا کا نام دیا، خُدا نے اُنہیں تخلیق کیا تا کہ وہ اُن سے مُحبت رکھ سکے اور تا کہ وہ بھی واپسی میں اُس سے مُحبت رکھ سکیں۔ خُدا نے اُنہیں  زمین پر ہر چیز کے اُوپر اختیار اور حُکمرانی دی۔ اُس نے اُنہیں دُنیا میں شہزادہ اور شہزادی بننے کیلئے بنایا۔اُس نے اُنہیں ایک خُوبصُورت باغ میں رکھا۔ خُدا نے اُن سے مُحبت رکھی۔ اور اُس نے اُنہیں بڑھنے اور زمین کو معمور کرنے کو کہا۔ سب کُچھ اچھا تھا۔

لیکن ایک دن کُچھ ہولناک اُس باغ میں ہُوا۔

کیا واقع ہُوا؟ پہلے آپ کو یہ سمجھنا ہے کہ خُدا کا ایک دُشمن ہے۔ یہ دُشمن  شیطان نامی ایک باغی فرشتہ ہے۔ خُدا نے اصل میں شیطان کو لُوسیفر نامی ایک خُوبصُورت اور طاقتور فرشتہ کے طور تخلیق کیا۔ لُوسیفر نے اپنے اندر کسی بُرائی کے بغیر ایک اچھے فرشتے کے طور شروعات کی۔ لیکن اُس کی خُوبصُورتی کے سبب، لُوسیفر اپنے دل میں مغُرور ہوگیا۔وہ خُدا کو مزیدبرآں  پرستش اور خدمت کرنا نہیں چاہتا تھا۔ اُس نے خُدا کے خلاف بغاوت کی۔ وہ خُود خُدا بننا چاہتا تھا۔ وہ بُرا ہوگیا اور خُدا نے اُسے آسمان سے نکال باہر کیا۔

   جب خُدا نے آدم اور حوا کو بنایا تو شیطان باغ میں آیا۔ وہ آدم اور حوا کو آزمانے لگا کہ وہ خُدا کے مُخالف ہوجائیں۔ اُس نے اُنہیں آزمایا کہ وہ خُدا کی نافرمانی کریں اور خُدا کے خلاف گُناہ کریں۔ اور اُنہوں نے کیا۔ خُدا نے آدم ارو حوا کو آزاد مرضی دی تھی۔ وہ اچھے اور بُرے میں چُننے اور فیصلہ کرنے کی اہلیت رکھتے تھے۔ جب آدم اور حوا نے گُناہ کرنا شروع کیا اور خُدا کی نافرمانی کی، کُچھ ہولناک واقع ہُوا۔ اُنہوں نے خُدا کیساتھ اپنا رشتہ کھو دیا۔ وہ گُناہ میں گر گئے۔ گُناہ ایک رُوحانی بیماری کی مانند ہے جس نے اُن کے دلوں کو اچھائی سے بُرائی میں تبدیل کردیا۔ آدم اور حوا گو بڑھے اور زمین کو معمور کیا، لیکن اُن کی اولاد بھی گُناہ سے بھر گئی۔ گنُاہ کی بیماری نے اب اِس دُنیا کو معمور کردیا ہے۔اِسی لئے لوگ جھوٹ بولتے ہیں، چوری کرتے ہیں، ایک دُوسرے کو نُقصان پہنچاتے ہیں اور ایک دُوسرے کو قتل کرتے ہیں۔

کُچھ اور ہولناک بھی واقع ہُوا۔ آدم اور حوا خُدا کی برکت سے تخلیق ہُوئے تھے۔ لیکن جب وہ گُناہ میں داخل ہُوئے، اُن پر اور اِس پُوری دُنیا پر ایک لعنت آئی۔ اِس دُنیا میں کمزوری، بیماری ، موت اور غُربت آئی۔ انسان  اب مزید برآں خُدا کے شہزادے اور شہزادیاں نہیں رہے، بلکہ گُناہ اور شیطان کے غُلام ہو گئے۔ سب انسان گُناہ کی ہولناک بیماری کا شکار ہوگئے۔ سب انسان لعنت کے تحت رہ رہے تھے۔سب انسانوں کیلئے  جسمانی موت اُن کا مُقدر ہُوا او رپھر اُنہیں خُدا کی حضُوری سے دُور کئے جانے کا ہمیشہ کیلئے بطور ایک رُوحانی ہستی سامنا کرنا پڑا۔

شیطان نے اِس دُنیا کو  جھوٹے خُداؤں اور جھوٹے مذاہب سے بھرنے کی کوشش کی ہے۔ لیکن صرف  ایک ہی خُدا ہے  اور وہ آپ سے مُحبت رکھتا ہے۔ وہ آپ کو بچانا چاہتا ہے اور  آپ کو آج اپنا بیٹا اور اپنی بیٹی بنانا چاہتا ہے۔

خُدا آپ سے چاہتا ہے کہ آپ کُچھ سمجھ لیں۔ کیونکہ اُس نے آپ کو اپنی شبیہ پر تخلیق کیا، آپ بیش قیمت ہیں اور اُس کیلئے  قابلِ قدر ہیں۔ خُدا نے آپ کو ایک مقصد اور منزل کیساتھ تخلیق کیا۔ اُس نے آپ کو تخلیق کیا تا کہ آپ سے مُحبت رکھ سکے اور تاکہ آپ اُسے واپسی میں مُحبت رکھ سکیں۔ آپ کی زندگی اہم ہے۔ آپ ایک قیمتی سونے کے سکے کی مانند ہیں۔ سکہ ہوسکتا ہے کھو گیا ہو۔ سکہ ہوسکتا ہے گندگی میں گرگیا ہو۔ سکہ ہوسکتا ہے پیروں تلے روندا گیا ہو۔ سکہ ایسا دکھائی نہیں دیتا ہوگا کہ اُس کی کوئی قدروقیمت ہے۔ لیکن سکہ اپنے بنانے والے کی شبیہ رکھتا ہے۔ سکہ ابھی بھی قابلِ قدر ہے۔ اِسے محض صاف کرنے اور اپنی اصل خُوبصُورت صُورتحال میں بحال کئے جانے کی ضرورت ہے۔

آپ اُس سکے کی مانند ہیں۔ آپ انسانی نسل کے گُناہ میں گرنے کے سبب کھو گئے تھے۔ آپ ہوسکتا ہے اِس تاریک اور شکستہ دُنیا کی گندگی میں  گر گئے ہوں۔ آپ ہوسکتا ہے اِس گُمراہ دُنیا میں بہت بگڑ گئے ہوں۔ آپ کو ہوسکتا ہے ایسے محسوس ہو کہ آپ کوئی اہمیت نہیں رکھتے۔ لیکن خُدا کہتا ہے کہ آپ بیش قیمت اور قابلِ قدر ہیں۔ آپ ابھی بھی اُس کی شبیہ رکھتے ہیں۔وہ آپ کو اِس دُنیا کی گندگی اور  گُناہ سے پاک صاف کرنا چاہتا ہے۔وہ آپ کو آپ کیلئے اپنے مقصد اور منزل تک بحال کرنا چاہتا ہے۔ وہ آپ سے مُحبت رکھنا چاہتا ہے اور آپ کو اپنا فرزند بنانا چاہتا ہے۔ وہ آپ کے دل کو شفا دینا چاہتا ہے اور آپ کو نیا بنانا چاہتا ہے۔

انسانی نسل کے گُناہ میں گھِر جانے کے بعد، خُدا نے ایک منصوبہ بنایا۔ وہ ہم سے مُحبت رکھتا ہے اوروہ ہم کو بچانا چاہتا ہے ۔

ہزاروں برس تک، خُدا نے دُنیا میں نبی بھیجے۔ اِن میں سے زیادہ تر نبی اسرائیل کے لوگوں اور سرزمین میں سے تھے۔ سب نبی ایک ہی پیغام رکھتے تھے: نجات دہندہ آ رہا ہے! نبیوں کے پیغامات کا بائبل میں اندراج ہے۔ یسعیاہ ، یرمیاہ، حزقی ایل اور دانی ایل جیسے عظیم نبی بھی تھے۔ اُن سب نے ایک ہی بات کہی: نجات دہندہ دُنیا میں آرہا ہے! وہ خُدا کے لوگوں کو اُن کے گُناہوں سے بچائے گا۔ جو کوئی بھی اُس نجات دہندہ پر ایمان لائے گا بچایا جائے گا۔ جو کوئی بھی اُس نجات دہندہ کے نام پر بُلایا جائے گا وہ نجات پائے گا۔جو کوئی بھی اِس نجات دہندہ پر ایمان لائے گا تمام گُناہوںکی مُعافی پائے گا۔ جو کوئی بھی اِس نجات دہندہ کے نام پر بُلایا جائے گا وہ ہمیشہ کی زندگی کیساتھ خُدا کا فرزند بن جائے گا۔

خُدا نے ایک مُوسیٰ نامی شخص بھی بطور نبی پیدا کیا۔ مُوسیٰ نے پاک طرز زندگی کیلئے اسرائیل کو خُدا کی شریعت دی۔ اُس نے اُنکو دس احکامات اور کئی دیگر احکامات دئیے۔ اِن حُکموں نے لوگوں کو بتایا کہ وہ جھوٹ نہ بولیں یا چوری نہ کریں  یا قتل نہ کریں ۔اِن حُکموں نے خُدا کو پاکیزگی کو ظاہر کیا۔اِن حُکموں نے لوگوں کو وہ باتیں سمجھائیں  جو خُدا پسند کرتا ہے اور وہ باتیں جن سے خُدا نفرت کرتا ہے کیونکہ وہ  اچھا ہے اور وہ پاک ہے۔

   لیکن یہ حُکم خُدا کے لوگوں کو نہیں بچا سکتے۔ حُکم اچھے تھے لیکن لوگ گُناہ کی بیماری میں مُبتلا تھے۔ حُکم کہتے ہیں کہ ہمیں جھوٹ نہیں بولنا چاہئے، لیکن لوگوں نے جھُوٹ بولنا جاری  رکھا۔ حُکم کہتے ہیں کہ ہم چوری نہیں کرنی چاہئے یا قتل نہیں کرنا چاہئے، لیکن لوگوں نے چوری کرنا اور قتل کرنا جاری رکھا۔ خُدا کے حُکموںکا مقصد یہ تھا کہ دُنیا کے سب لوگ سمجھ لیں کہ ہمیں نجات دہندہ کی ضرورت ہے۔

اور اِس لئے ہزاروں برس تک خُدا نے نبی بھیجے۔ وہ بائبل کے صفحات کو لکھ رہے تھے۔ نبیوں کا پیغام یہ تھا: نجات دہندہ آ رہا ہے! جو کوئی اُس پر ایمان رکھتا ہے اور اُس کا نام لیتا ہے ، نجات پائے گا۔ اُن کے گُناہ مُعاف کئے جائیں گے۔ وہ خُدا کے پیارے  شہزادے اور شہزادیوں کے طور پر ہمیشہ کی زندگی پائیں گے۔

 

یہ سمجھنے کیلئے کہ پھر کیا واقع ہُوا، آپ کو پہلے بڑے بھید کو سمجھنا ہوگا۔ بائبل کہتی ہے کہ صرف ایک خُدا ہے لیکن وہ تین حصوں یا تین اشخاص  کی صُورت میں موجود ہے۔ ہم اِسے تثلیث کہتے ہیں۔ اور چونکہ خُدا نے آپ کو اپنی شبیہ پر تخلیق کیا، آپ بھی تثلیث ہیں۔ آپ تین حصوں کیساتھ ایک شخص ہیں: آپ رُوح، جان اور جسم ہیں۔ آپ کی رُوح ، آپ کا ابدی حصہ ہے، خُدا کی شبیہ پر بنایا گیا۔ آپ کی جان، آپ کا ذہن اور آپ کی مرضی اور آپ کے جذبات ہیں۔ آپ کا جسم ، آپ کا جسمانی حصہ ہے جو دُوسرے لوگ دیکھ سکتے ہیں اور سُن سکتے ہیں اور چھُو سکتے ہیں۔ پس آپ تین حصوں پر مشتمل ایک شخص ہیں۔ خُدا بھی ایک تثلیث ہے۔ وہ تین حصوں کیساتھ ایک خُدا ہے۔ خُدا اپنے آپ کو ہم پر بطور باپ اور بیٹے اور رُوح القُدس ظاہر کرتا ہے۔

خُدا کا جو حصہ آسمان پر رہتا ہے۔ وہ باپ ہے۔ خُدا کا جو حصہ دُنیا میں ہمیں بچانے کیلئے آیا۔ وہ ہماری مانند انسان بنا۔ وہ ایک کنواری سے پیدا ہُوا۔ اُس کی پیدائش ایک معجزہ تھی۔ وہ ہمیں نجات دینے کیلئے آیا۔ وہ ہی نجات دہندہ ہے۔ اُس کا نام یسوع مسیح ہے۔  اور خُدا کا ایک حصہ رُوح القُدس کہلاتا ہے۔ جب آپ یسوع مسیح کو بطور اپنے نجات دہندہ قبُول کرتے ہیں، تو رُوح القُدس آپ کے اندر ہمیشہ کو بسنے کیلئے آتا ہے! خُدا درحقیقت آپ کے اندر بسنا چاہتا ہے کیونکہ وہ آپ سے مُحبت رکھتا ہے!

یہ یُوں واقع ہُوا: کوئی دو ہزار برس قبل، جبرائیل نامی خُدا کا ایک فرشتہ اسرائیل میں ایک نوجوان عورت پر ظاہر ہُوا۔ عورت کی بیاہ کیلئے منگنی ہوچُکی تھی، لیکن وہ ابھی بیاہی نہیں ہُوئی تھی۔ وہ ایک کنواری تھی۔ وہ خُدا پر ایمان رکھتی تھی اور خُدا سے مُحبت رکھتی تھی۔ اُس کا نام مریم تھا۔ فرشتہ نے مریم کو بتایا کہ خُدا نے اُسے چُنا ہے اور کہ اُس کے بچہ پیدا  ہوگا۔ اُسے بچے کا نام یسوع رکھنا ہوگا۔ یہ بچہ خُدا کا بیٹا کہلائے گا کیونکہ وہ انسانی ماں سے پیدا ہوگا لیکن اُس کا باپ صرف خُدا ہوگا۔ یہ بچہ دُنیا کا نجات دہندہ ہوگا۔ یہ بچہ وہ ہے جس کی بابت سب نبیوں نے بتایا ہے۔ ایک دن، وہ سارے دُنیا کا خُداوند اور بادشاہ بھی ہوگا۔ مریم پُوچھتی ہے کہ کیسے ہوگا کیونکہ وہ کنواری تھی۔ فرشتہ جواب دیتا ہے کہ خُدا کا رُوح القُدس اُس پر اُترے گا اور کہ پیدائش خُدا کا معجزہ ہوگا۔ مریم فرشتہ کی بات کا یقین کرتی ہے اور نو مہینے بعد وہ ایک لڑکے کو جنم دیتی ہے۔ پس وہ اُسے وہ نام دیتی ہے جو فرشتے نے اُسے بتایا تھا ۔۔۔یسوع۔

یسوع انسانی جسم میں خُدا تھا۔ وہ خُدا کی تثلیث کا دُوسرا حصہ ہے۔ وہ دُنیا میں ہماری مانند آیا۔ وہ نجات دہندہ بننے کیلئے آیا۔ وہ ہمیں گُناہ، اور موت اور لعنت  سے بچانے کیلئے آیا۔ وہ ہمیں پھر سے خُدا کے فرزند بنانے کیلئے آیا۔ وہ آیا کیونکہ وہ ہم سے بہت مُحبت رکھتا ہے ۔وہ آیا کیونکہ وہ آپ سے بہت مُحبت رکھتا ہے !

خُدا آپ کو جانتا ہے۔ وہ آپ کا نام جانتا ہے۔ وہ جانتا ہے کہ آپ کے سر پر کتنے بال ہیں۔ وہ آپ سے مُحبت رکھتا ہے اور وہ چاہتا ہے کہ آپ اُس کے ہمیشہ کیلئے فرزند بنیں۔

یسوع بڑا ہُوا اور انسان بنا۔ جب وہ تیس برس کا تھا، تو خُدا کا رُوح القُدس آسمان سے اُس پر اُترا اور اُسے قوت سے بھردیا۔ اِس کے علاوہ باپ کی آواز بھی آسمان سے بہت سے لوگوں کو سُنائی دی۔ باپ نے یسوع سے کہا، ’’تُم میرے پیارے بیٹے ہو‘‘۔ اُس وقت سے، یسوع لوگوںکو اپنے  باپ خُدا کے بارے میں تعلیم دینا شروع کردیتا ہے۔ وہ لوگوں سے مُحبت رکھتا ہے۔ وہ  اُنہیں آسمان اور خُدا کی بادشاہی کے بارے میں تعلیم دیتا ہے۔ وہ بیماروں کو شفا دینا اور معجزات کرنا  شروع کردیتا ہے۔ وہ حتیٰ کہ مُردوں کو بھی زندہ کرتا ہے۔ وہ لوگوں کو تمام بُری رُوحوں سے آزاد کرتا ہے۔ وہ اُنہیں اُن کے گُناہ مُعاف کرتا ہے۔ وہ بارہ آدمیوںکو اپنے پیچھے ہولینے کو بھی کہتا ہے ۔۔۔تا کہ اُس کے شاگرد ہوں۔

یسوع سب لوگوں کو بتاتا ہے کہ وہ  وہی نجات دہندہ  تھا جس کی بابت نبیوں نے بتایا تھا۔ یسوع نے اُنہیں بتایا کہ اگر وہ اُس پر ایمان لائیں گے تو وہ نجات پائیں گے۔ اُس نے ہر کسی کو بتایا کہ وہ خُدا باپ کے پاس واپس جانے کا واحد راستہ تھا۔ اُس نے اُنہیں بتایا کہ اگر وہ اُس پر ایمان لائیں گے تو وہی خُدا کا رُوح القُدس جلد آئے گا اور اُن کے دلوں میں بھی رہے گا۔

 

تین برس، لوگوںکو تعلیم دینے اور بیماروںکو شفا دینے کے بعد، اُس دور کے مذہبی رہنما ؤں نے یسوع سے بہت حسد کیا۔ بہت سے لوگ یسوع کی پیروی کررہے تھے، لیکن مذہبی رہنما یسوع پر ایمان نہیں رکھتے تھے۔ وہ ابھی بھی سمجھتے تھے کہ وہ اپنے آپ کو مُوسیٰ نبی کی شریعت پر قائم رہنے سے بچا سکتے ہیں۔حتیٰ کہ یسوع نے بہت سے معجزات کئے ، وہ یقین کرنا نہیں چاہتے تھے کہ یسوع ہی وہ نجات دہندہ ہے جس کی بابت نبیوں نے بتایا تھا۔ وہ اُس کی سب لوگوںمیں شہرت سے حسد کرتے تھے۔ پس وہ یسوع پر جھوٹے جرائم کا الزام لگاتے ہیں جو اُس نے نہیں کئے تھے۔ اور وہ کہتے ہیں کہ اُسے خُدا ہونے کا دعویٰ کرنے اور نجات دہندہ ہونے کا دعویٰ کرنے پر موت کی سزا دی جائے۔

اُن دنوں میں رُومی بادشاہت کی اسرائیل کی سرزمین پر سلطنت تھی ۔ پس اسرائیل کے مذہبی رہنما یسوع کو رومی حکومت کے حوالے کردیتے ہیں کہ وہ اُس کے جُرائم کی اُسے سزا دیں۔ حتیٰ کہ یسوع بے گُناہ تھا، رُومی حکومت اُسے موت کی سزا دینے پر اتفاق کرتی ہے۔وہ اُسے کوڑے مارتے ہیں اور شدید تشدد کرتے ہیں۔ پھر وہ اُسے لکڑی کی صلیب پر کیل جڑ دیتے ہیں۔ وہ اُس دور میں ایسے مُجرموں کو سزا دیتے تھے۔ یسوع نے جو کُچھ کیا تھا وہ لوگوں سے محبت رکھنا تھا اور لوگوں کو مُعاف کرنا اور شفا دینا تھا، لیکن مذہبی رہنماؤں اور رُومی حکُومت نے اُسے مصلُوب کیا۔ یسوع دُنیا میں واحد گُناہ سے پاک شخص تھا۔ وہ واحد تھا جس نے کبھی کوئی گُناہ نہیں کیا تھا!

یسوع نے اپنے آپ کو کیوں مصلُوب ہونے دیا؟ اگر وہ خُدا تھا، تو کیا وہ ایسا ہونے سے روک نہیں سکتا تھا؟ جی ہاں، لیکن یسوع درحقیقت اِس دُنیا میں صلیب پر موت کیلئے آیا تھا۔ یہ اُس کا منصوبہ تھا۔ وہ ہمارے لئے مرنے کو آیا۔ وہ ہمارے گُناہوں کیلئے مرنے کیلئے آیا۔

بائبل کہتی ہے کہ گُناہ کی سزا موت ہے۔ بالکل جس طرح ہر جُرم کی سزا ہوتی ہے یا قید ہوتی ہے، گناہ کی سزا موت ہوتی ہے۔ یہ خُدا کی حضُوری سے ابدی انکار ہے۔ خُدا ہم سے مُحبت رکھتا ہے، اور وہ ہم کو بچانا چاہتا ہے۔ لیکن وہ انصاف کا خُدا بھی ہے۔ پس خُدا کو اپنے انصاف کی تسکین کیلئے ہمارے گُناہوں کی سزا بھی دینا تھی۔ پھر وہ ہمیں مُعاف کرسکتا تھا۔ پس، یسوع، خُدا کا دُوسرا حصہ ، تثلیث کا دُوسرا شخص، اِس دُنیا میں انسان بن کر آیا کہ ہماری جگہ صلیب لے سکے۔ وہ ہماری سزا پانے کیلئے آیا۔ وہ ہمارے خاطر مرنے کیلئے آیا۔جب وہ اپنا خُون صلیب پر بہا رہا تھا، تو وہ ہمارے سارے گُناہوں کا پُورا مُول ادا کررہا تھا۔ ساری دُنیا میں واحد گُناہ سے پاک شخص سب قصُوروار لوگوں کی جگہ پر مر رہا تھا۔ یسوع کے صلیب پر آخری الفاظ یہ تھے: ’’تمام ہُوا‘‘۔

یہ کوئی دوہزار برس قبل، ایک جُمعہ کی دوپہر تھی۔

یسوع کی موت کے بعد، وہ اُس کی لاش کو صلیب پر سے اُتارتے ہیں۔ وہ اُسے قبر میں رکھتے ہیں۔ قبر کُچھ ایک چھوٹی غار کی مانند تھی۔ وہ اُس کی لاش کو اندر رکھ دیتے ہیں اور قبر کے مُنہ پر ایک  بڑا پتھر رکھ دیتے ہیں۔ مذہبی رہنما سمجھتے ہیں کہ وہ یسوع سے چھُٹکارا پا چُکے ہیں ۔ حتیٰ کہ وہ باغی فرشتہ شیطان سمجھتا ہے کہ اُنہوں نے خُدا کے بیٹے کو قتل کردیا ہے۔ وہ سمجھتا ہے کہ وہ فتح پا چُکا ہے۔ وہ سمجھتا ہے کہ وہ انسانی نسل کو اپنا غُلام بنانا اور اُنہیں اذیت دینا جاری رکھ سکے گا اُن کے گُناہ میں پڑنے کے سبب سے۔

لیکن اتوار کی صُبح سویرے ، کُچھ حیرت انگیز واقع ہُوا۔ فرشتے آئے اور پٹھر کو ہٹا دیتے ہیں اور یسوع قبر میں سے  زندہ باہر آ جاتا ہے۔اُس کے آسمانی باپ نے اُسے دُنیا کے گُناہوں کا مُول ادا کرنے کے بعد  مُردوں میں سے زندہ کیا تھا۔ یسوع اپنے شاگردوں پر ظاہر ہُوا اور اُنہیں پیغام دیا۔وہ کہتا ہے،کہ ’’آسمان اور زمین کا کُل اختیار مُجھے دیا گیا ہے‘‘۔ انسان کے طور پر، یسوع نے ہمیں نجات دی ہے اور ہمیں گُناہ سے اور شیطان کی غُلامی سے بچایا ہے۔ خُدا انسان بنا، لوگوں کی اُس نسل کا فرد جنہیں اُس نے خُود تخلیق کیا، تا کہ وہ  ہمیں بچا سکے اور ہم سے مُحبت رکھ سکے۔ اگر ہم اُس پر ایمان رکھتے ہیں اور اُس کی پیروی کرتے ہیں تو ہم مزید برآں گُمراہ غُلام نہیں رہیں گے بلکہ خُدا کے شہزادے اور شہزادیاں ہونگے۔ ہم بحال ہونگے۔

یسوع اپنے ماننے والوں کو یہ بھی بتاتا ہے کہ وہ جا کر سب قوموں  میں اِس پیغام کی مُنادی کریں۔۔۔اِس کہانی کی ۔۔۔ساری دُنیا میں۔ یہ پیغام ’’خُوشخبری‘‘ کہلاتا ہے۔ اگر آپ ایمان رکھتے ہیں کہ وہ آپ کی خاطر مُوا اور مُردوں میں سے جی اُٹھا، تو آپ نجات پائیں گے۔ یسوع نے کہا کہ جو کوئی اُس پر ایمان رکھتا ہے اور اُس کا نام لیتا ہے وہ نجات پائے گا۔ آپ کے گُناہ خُدا کے سامنے مُعاف کئے جائیں گے۔ لوگ جو یسوع کے بغیر مر جاتے ہیں وہ  ہمیشہ کیلئے کھو جاتے ہیں ۔ وہ اپنے گُناہوں میںمر جاتے ہیں اور ہمیشہ کیلئے خُدا سے الگ ہو جاتے ہیں۔لیکن جو لوگ یسوع کو اپنے نجات دہندہ کے طور قبُول کرتے ہیں وہ جب مرتے ہیں تو آسمان کو جاتے ہیں۔ وہ کبھی بھی دوبارہ خُدا سے الگ نہیں کئے جائیں گے۔

اور یسوع کہتا ہے کہ کُچھ اور بھی حیرت انگیز واقع ہوگا۔ جس لمحے آپ یسوع مسیح کو اپنے نجات دہندہ کے طور پر مانتے ہیں تو خُدا کا رُوح القُدس آپ کے دلوں میں آئے گا اور آپ نئے سرے سے پیدا ہونگے۔ آپ خُدا سے  ایک نیا دل اور ایک نئی رُوح  پائیں گے۔ آپ خُدا کے فرزند ہونگے۔ آپ ہمیشہ کی زندگی پائیں گے۔گُناہ کی بیماری آپ پر سے اپنا اثر کھونے لگے گی۔ خُدا آپ کے دل کو اپنی مُحبت اور اپنی پاکیزگی سے بھر دے گا اور آپ اندر سے ایک نیا شخص بن جائیں گے۔ اور خُدا کا رُوح آپ کے دل میں ہمیشہ کیلئے بسے گا۔ آپ خُدا کی حضُوری کو جاننا شروع کردیں گے اور حتیٰ کہ خُدا کی آواز کو اپنے دل کے اندر سے۔ وہ آپ کی راہنمائی کرے  گا اور آپ کی مدد کرے گا اور آپ کے دل کے اندر سے بات کرتے ہُوئے آپ کو تعلیم دے گا۔

بائبل کہتی ہے کہ یسوع اپنے مُردوں میں سے زندہ ہونے کے  چالیس دن بعد واپس آسمان پر چلا گیا۔ وہ باپ کے دہنے ہاتھ بیٹھا ہے۔ وہ وہاں باپ کے  دہنے ہاتھ بطور ہمارے نجات دہندہ اور ہمارے خُداوند کے ہے۔ بائبل کہتی ہے کہ ایک دن یسوع آسمان سے پھر آئے گا۔ جب وہ ایسا کرے گا تو وہ قُدرت میں آئے گا اور ساری دُنیا کا بادشاہ ہوگا۔ ہر گھُٹنا اُس وقت اُس کے آگے جھُکے گا۔ لوگ جو اُس پر ایمان رکھتے ہیں اور اُس کی بطور بادشاہ خدمت کرتے ہیں اُس کیساتھ پھر اُس کی بادشاہی میں سلطنت کریں گے۔ اگر آپ اب اُس کی خدمت بطور اپنے بادشاہ کے کرتے ہیں، تو آپ اُس کے ساتھ بطور شہزادے یا شہزادیاں سلطنت کریں گے جب وہ واپس آئے گا اور اپنی بادشاہی لائے گا۔

کیا آپ ابھی  یسوع کا نام لینے کیلئے تیار ہیں؟ کیا آپ ابھی نجات پانا چاہتے ہیں؟ کیا آپ اُس پر ایمان لانے اور اُس کے پیچھے ہو لینے کیلئے تیار ہیں؟ کیا آپ اِسی لمحے خُدا کے فرزند بننا چاہتے ہیں؟  تو ابھی یہ دُعا پڑھیں۔ باآوازِ بُلند یہ کہیں۔ اِس لمحے میں، آپ نجات پائیں گے!

یہ دُعا کریں: ’’ائے خُداوند یسوع، میں ایمان رکھتا ؍ رکھتی ہوں کہ آپ خُدا ہیں جو انسان بنے۔ آپ اِس دُنیا میں مُجھے بچانے کیلئے آئے۔ آپ خُدا  کےبیٹے ہیں۔ائے یسوع، میں آپ پر ایمان رکھتا ہُوں ہوں اور آپ سے درخواست کرتا ہُوں کہ اب مُجھے بچا لیں۔ میں ایمان رکھتا ہُوں  کہ آپ نے میری خاطر جان دی۔ آپ نے اپنی زندگی اور اپنے صلیب پر خُون سے میرے گُناہوں کا مُول ادا کیا تا کہ میں مُعافی پاؤں۔ میں ایمان رکھتا ہُوں  کہ آپ مُردوں میں سے جی اُٹھے۔ آپ میرے نجات دہندہ ہیں۔ ائے یسوع اب میرے دل میں آئیں۔ اور اپنے رُوح القُدس کو اِسی وقت  میرے دل میں آنے  دیں۔ اِس لمحے سے، خُدا میرا باپ ہے۔ وہ مُجھے  سے  ابدی مُحبت  رکھتا ہے۔ اِس لمحے، میں گُناہوں کی مُعافی پاتا ؍ پاتی ہوں اور میں یسوع مسیح کا بطور اپنے نجات دہندہ  نام لینے سے ہمیشہ کی زندگی پاتا ؍ پاتی ہُوں۔ائے یسوع، میں آپ کی پیروی کرونگا ؍ کرونگی۔ آمین!‘‘۔

 

    مُبارک ہو! آپ اب خُدا کے فرزند ہیں۔ یسوع آپ کے دل میں آ گیا ہے۔ آپ نجات پا چُکے ہیں!

اب آپ کو کیا کرنا چاہئے؟

اگر آپ  شرکت کرنے کیلئے ایک اچھی مسیحی کلیسیا پا سکیں۔ تو اُس شخص کو بُلا بھیجیں جس نے آپ کو یہ کتاب دی تھی۔ وہاں پر لوگوں کو اپنے فیصلے کی بابت بتائیں۔بائبل لیں اور اُسے پڑھنا شروع کردیں، خاصکر نیا عہد نامہ۔ نیا عہد نامہ بائبل کا وہ حصہ ہے جس میں ہم اب  آج رہ رہے ہیں۔یسوع کے بارے میں اور زیادہ جانیں۔ کلیسیا کے رہنماؤں کو آپ کو یسوع کی پیروی کے بارے میں اور زیادہ تعلیم دینے دیں۔ہم خُدا کا خاندان ہیں اور ہمیں ایک دُوسرے کی ضرورت ہے۔ ہم ایک دُوسرے سے مُحبت رکھتے ہیں اور ہم ایک دوسرے کی سیکھنے میں اور رُوحانی طور بڑھنے میں مدد کرتے ہیں۔ خُدا آپ کو برکت دے!